Main Bhi Aik Aisa Hi Muslman Hoon

Ye blog likhte waqt na koi mera dost hai aur na dushman. Ye aik neutral Pakistani muslman k tor per likh raha hoon.

Kuch alfaz aap k andar ubal rahe hote hain lekin unko istemal kerna bara mushkil sa ho jata hai, iss se pehle k wo mar jayen unhen ik tooti phooti shakal de deni chahiye.

Twitter ke sath kaam kerne aur iske baray main aik blog chalanay ki wajah se mera poora nahi tou adha din Twitter per logon k khyalat perhte guzarta hai, har koi apne dil ki bharras apne andaz main nikaalne main masroof hota hai. Lekin kuch logon tab tak andar se sakoon nahi milta jab tak wo apna as a Muslim mazaq na urra lain.

Hote wo hum main se hi hain ya phir wo waqai hum main se nahi hote.

Aik mazhab ka mazaq urra ker khud ko "bold” samajhne walay bhi ajeeb hi hote hain, ye Islam ka mazak tou khud uratay hain lekin sects ki behas kerte hue maa behn ki gaaliyan dene se bhi nahi rukte. Extremism k khilaf bolte hue itni extreme type ki gaaliyan dete hain k un jese 5, 6 "roshan khayal” retweet ker hi dete hain, jisay wo apni kaamyabi samajhte hain.

Kuch aise hote hain jo sara din Pope ki selection se le ker Champions Trophy, Veena Malik se ker ker Barack Obama tak ko discuss aur retweet ker lainge lekin jese hi kisi bhoolay bhatkay ki Islamic tweet ya Islam se mohabbat ke baray main kuch feelings parh lain tou un ke andar ka critic jaag jata hai aur un ki "Logon Ko Adhi Raat Ko Islam Kyun Yaad Aa Jata Hai” jesi tweet perhne ko milti hain. Matlab ye ke aadhi raat ko humesha Sunny Leone ya Emma Watson hi yaad aa sakti hain?

Unki girlfriend ko koi chher de tou uski khair nahi lekin wo lakhon logon k mazhab mazak urra lain tou ye unka paidaishi haq hai.

Hum main se aksar log apne maa baap se bohat pyar kerte hue bhi perfect baitay/betiyan nahi hotay. Hum unka kaha manain na manain lekin koi unki bezti kray ye bardasht nahi ker sakte.

Kuch muslman bhi aise hi hotay hain, aur main bhi aik aisa hi muslman hoon.

اردو فونٹ میں پڑھیے

-یہ بلاگ لکھتے وقت نہ ہی کوئی میرا دوست ہے نہ دشمن، یہ ایک نیوٹرل پاکستانی  مسلمان کے طور پر لکھ رہا ہوں

کچھ الفاظ آپ کے اندر ابل رہے ہوتے ہیں لیکن ان کو ترتیب دے کر استعمال کرنا ہر کسی کا ہنر نہیں ہوتا اور نہ ہی میرا ہے- لیکن اس سے پہلے کہ وہ الفاظ مر جائیں انہیں ایک ٹوٹی پھوٹی شکل دے دینی چاہیے

ٹوئٹر کے ساتھ کام اور اس کے متعلق ایک بلاگ چلانے کے ناتے میرا سارا دن نہیں تو آدھا دن ٹوئٹر پر لوگوں کے خیالات پڑھتے گزرتا ہے، ہر کوئی اپنے دل کی بھڑاس اپنے انداز میں نکالنے میں مصروف ہوتا ہے- لیکن کچھ لوگوں کو تب تک اندر کا سکون میسر نہیں ہوتا جب تک وہ اپنا بحیثیت مسلمان مذاق نہ اڑا لیں

-ہوتے وہ ہم میں سے ہی ہیں یا پھر وہ واقعی ہم میں سے نہیں ہوتے

ایک مذھب کا مذاق اڑا کر خود کو "بولڈ” سمجھنے والے بھی عجیب ہی ہوتے ہیں، یہ اسلام کا مذاق تو خود اڑاتے ہیں لیکن فرقوں کی بحث کرتے ہوئے ماں بہن کی گالیاں نکالنے سے بھی گریز نہیں کرتے- انتہا پسندی کے خلاف بولتے ہوئے انتہانی غلیظ گالیوں کا استعمال کرتے ہیں کہ ان جیسے ٥، ٦ "روشن خیال” اسے ری ٹویٹ ہی کر دیتے ہیں جسے وہ اپنی کامیابی سمجھتے ہیں

کچھ ایسے ہوتے ہیں جو سارا دن پوپ کے انتخاب سے لے کر چیمپئنز لیگ، وینا ملک سے لے کر براک اوباما کو تو ڈسکس کر لینگے لیکن جیسے ہی اپنی ٹائم لائن کسی بھولے بھٹکے کی اسلامی ٹویٹ یا اسلام سے محبت کے متعلق اس کے کچھ احساسات پڑھ لیں تو ان کے اندر کا نقاد جاگ جاتا ہے اور ان کی "لوگوں کو رات کو اسلام کیوں یاد آ جاتا ہے” جیسی ٹویٹس پڑھنے کو ملتی ہیں- مطلب یہ کہ آدھی رات کو ہمیشہ سنی لیون یا ایما واٹسن ہی یاد آ سکتی ہیں؟

-ان کی گرل فرینڈ کو کوئی چھیڑ دے تو اسکی خیر نہیں لیکن وہ لاکھوں لوگوں کے مذہب کا مذاق اڑا لیں تو یہ ان کا پیدائشی حق ہے

ہم میں سے اکثر لوگ اپنے ماں باپ سے بہت محبت کرتے ہوئے بھی اچھے بیٹے/بیٹیاں نہیں ہوتے- ہم ان کا کہا مانیں یا نہ مانیں لیکن کوئی ان کی بے عزتی کرے یہ برداشت نہیں کر سکتے

-کچھ مسلمان بھی ایسے ہی ہوتے ہیں اور میں بھی ایک ایسا ہی مسلمان ہوں

Advertisements

18 خیالات “Main Bhi Aik Aisa Hi Muslman Hoon” پہ

  1. sorry to say lakin bhai dosero pe tenqeed asaan hoti hai ab bhe air shayed mai bhe aysc he muslim hon na ap ko yaadhai kai bar maine ne ap se req ki the pakistan mai raped aur ziyadati hone wali bachiyon kay mulzimo kay liye pakista- mai qanoon kiu nhe bana kiu nhe bolte hum? mai ne ap se kha tha kay ap trend maker hai is kay bare mai b awaz uthaye lakin ap ne tawajo nhe di ap. her roz jokes aur ajeeb trend bana bana kay srif apni web aur social media ids to chala saktay per muslim aur pakistani hone ka haq kon ada keray ga? such yh hai k hum sub social media mai kud ko famous aur perfect banane kay chakero mai hai insan ko insan kay asolo aur buraiyon kay khilaf batane bolne trend kay through awareness dne ka hum souchte he nhe sara din fazol.kism kay trend banane mai lagay hai awareness kiu nhe dete bhe kbi drugs kay bare mai rukne us kay khilaaf awaz nhe utha tau per filmo aur celeberities kay ids ki list banana nhe bholte thanks such kha hum sub ayse he muslim hai

    پسند کریں

  2. ujaved

    Sab se zyada gussa tab aata hai, jab loug apne smartphones ki screens ke peechay baithke ek dusray ko "hypocrite” ka label dene lagtey hain.
    Jabke sirf aur sirf khuda ko yeh rutba haasil hai, ke wo jaan sakay insaani dil main kya hai. Per yeh inn "bold” logoun ko kon samjhaye.

    پسند کریں

  3. Very nice piece of writing and very good thoughts.
    bas eik bat ye important hai keh ham sab apnay aap ko Islam ka scholar samajhtay hain – jis ki waja say dosroon ko eik dam ghalat keh daitay hain.
    Let’s see aap is blog per kis qism kay topics ko represent kartay hain – I wish you good luck and May Allah Guide you & me to the path of His loved ones…

    پسند کریں

  4. Wonderful post I must say ! I can’t decide whether to write in english or urdu though 😉 English me comments dainay ki itni aadat ho gae hai 🙂 I am not a twitter user I am a facebook user, just started twitter for my blog ….. But I am aware of these so called roshan khayal people and what they think and do ! Per hum sirf unki aadatun ko bura samajh saktay hain aur bura keh b saktay hain kabi kabi, unhain rook naheen saktay…..Sad but the reality ! Very nice blog…..Maza aa gya itnay arsaay baad urdu me post perh k 🙂 Love it ! xx

    پسند کریں

  5. Anonymous

    دراصل ایمان با المشاہدہ اور ایمان با الغیب کا فرق ہے
    امارت ‘ صدارت ‘ وزارت ‘ زر ‘ زن ‘ زمین ‘ شراب کباب ‘ اجسام کی پوجا ‘ دو تین منزلہ کوٹھیاں ‘ بنگلے ‘ دو تین گاڑیاں ‘ کئی ملکوں کی سیر وغیرہ وغیرہ
    یہ سب نظر آنے والی چیزیں ‘ حالات ‘ کیفیات ‘ لذّات ہیں ‘ مگر دین اسلام کی بنیاد ہی (بظاہر) نہ نظر آنے والی چیزوں’ حالات و لذّات پر ایمان لانا ہے
    جن بولڈ لوگوں کا آپ ذکر کیا ہے ‘ وہ اسی کیفیت کا شکار ہیں
    مگر اس کیفیت کے محرکات بہت سے ہیں ‘ ماحول ‘ تعلیم ‘ ذہن سازی ‘ زندگی کے مقاصد وغیرہ ‘ ان کی اپنی لمبی تفصیلات ہیں

    بہت اچھا لگا آپ جیسے نوجوان نے اپنے آپ کو ایسا مسلمان سمجھا ‘ لکھا اور بتایا (حالانکہ آپ کے پاس اوپر رقم کردہ فہرست میں سے اکثر چیزیں وافر یا محدود ہوں گی’ امارت ‘ زر ‘ زمین اور سب سے نمایاں آپ کا اٹھنا بیٹھنا خواتین /لڑکیوں میں کافی زیادہ ہے ) مگر اس سب کے باوجود آپ کو اک رویہ غلط دکھا مسلمان ہونے کے ناطے سے ‘ جس کا اظہار آپ نے کر دیا . . . . کرتے رہیں

    میری دعا ہے الله العزت آپ کے ایمان کو اور بلند درجوں پر لے جائے ‘ جس کی بہرحال کوشش آپ نے خود شروع کرنی ہے – آمین

    پسند کریں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s