میں نعرۂ مستانہ

میں نعرۂ مستانہ، میں شوخیِ رندانہ
میں تشنہ کہاں جاؤں، پی کر بھی کہاں جانا

عابدہ پروین کی آواز اچانک سے گونجنا شروع ہوگئی اور چھوٹے سے رکشے کا ماحول صوفیانہ سا ہوگیا، ماحول تو خیر شاید اندر کا ہی ہوتا ہے۔ اندھیری سڑک کو گاڑیوں اور رینگتے ہوئے موٹرسائیکلوں سے نکلتی زرد روشنی نے کچھ حد تک روشن کیا ہوا ہے، چاروں طرف بس بھونچال سا ہے ہارن، شور، دھواں، ریس، افراتفری، جیسے کہ آگے بڑھ جانے والا سب جیت گیا، پیچھے والے ہار گئے۔ ویسے ہی جیسے بچوں کو بچپن سے ہی سکھا دیا جاتا ہے کہ سکول میں فرسٹ آنا ہے، دوسروں سے آگے بڑھنا ہے، ہرانا ہے باقیوں کو، جیتو گے تو خوشی ہوگی، باقی تم سے ہاریں گے تو سینہ فخر سے بلند ہوگا۔ وہی سب ہو رہا ہے، دوسروں کو ہرانے کی چاہ اور مقابلہ بازی معاشرے میں ہر جگہ سر اٹھائے ہوئے ہے۔

اچانک رکشے کو جھٹکا لگا اور عابدہ پروین کی آواز کو بھی ایک مختصر بریک لگی۔

میں واصفِ بسمل ہوں، میں رونقِ محفل ہوں
اک ٹوٹا ہوا دل ہوں، میں شہر میں ویرانہ

ساتھ چلتی ہوئی گاڑی پولیس موبائل ہے، جس میں رائفلز پکڑے پولیس اہلکار ایک ملزم کو لیے بیٹھے ہیں جس کی شیو بڑھی اور چہرہ ہے کہ صدیوں کا ویرانہ۔ سپاٹ چہرہ لیے پولیس والے اندر نظر رکھنے کے ساتھ ساتھ باہر بھی نظر رکھے ہوئے ہیں۔

اس کے ساتھ ہی ایک موٹر سائیکل والا تقریباٹکراتے ہوئے گزرا اور زگ زیگ کرتے ہوئے آگے کہیں گاڑیوں کے جنگل میں گم ہو گیا۔

رکشے نے دو، چار بڑے جھٹکے لیے اور میں سوچوں کے جنگل سے نکلا، دھویں اور گردوغبار سے بھری اس ہوا میں ایک لمبا سانس کھینچا۔ گھر بس آنے کو ہے، پتلون کی جیب سے ایک سو پچاس روپے نکال کر شرٹ کی جیب میں رکھ رہا ہوں، موبائل واپس جیب میں۔ یہ ہے میرے آفس سے گھر واپس آتے ہوئے رکشے میں گزرے لاکھوں لمحات میں سے چند لمحات کا احوال۔

"پھر آگئی ان کی یاد، وہ نہیں آئے۔۔”

گانا بدلا اور میرا گھر آگیا۔

Advertisements

ایک خیال “میں نعرۂ مستانہ” پہ

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s